سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(312) شیخ محمد بن عبدالوہاب کے بارے میں غلط پروپیگنڈہ

  • 8132
  • تاریخ اشاعت : 2013-11-12
  • مشاہدات : 1170

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بعض لوگوں نے مجھے کہا ہے کہ ایک وہابی فرقہ بھی ہوتاہے۔ میں نے کہا ’’وہ وہابی فرقہ نہیں یہ نام تو اشراف (مکہ) نے اس لئے رکھ دیا ہے کہ لوگوں کو اس اصلاحی تحریک سے دور رکھ سکیں۔ ‘‘ لیکن ان میں سے ایک شخص نے کہا ’’محمد بن عبدالوہاب رحمتہ الله علیہ واقعی ایک دینی مصلح تھے‘ لیکن زندگی کے آخری حصے میں وہ راہ راست پر قائم نہیں رہے تھے کیونکہ انہوں نے کئی صحیح حدیثیں اس لے رد کردی تھیں کہ وہ ان کی رائے کے مطابق نہیں تھیں۔ ‘‘ آپ کیا فرماتے ہیں ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

شیخ محمد بن عبدالوہاب رحمتہ الله علیہ سلفیت‘ صحیح عقیدہ اور صحیح منہج کیطرف دعوت دینے والے ایک بہت بڑے داعی تھے۔ آپ کی کتابیں انہی مسائل سے بھری پڑی ہیں۔ آپ نے جو بتایا ہے کہ ان کی دعوت کے کسی مخالف نے کہا کہ وہ زندگی کے آخری حصہ میں راہ راست سے ہٹ گئے تھے کیونکہ انہوں نے اپنی رائے کی مخالفت کرنے والی حدیوں کو رد کردیا تھا‘ یہ بالکل جھوٹ اور جناب شیخ محترم پر محض الزام ہے۔ وہ تو وفات تک سنت کا انتہائی احترام کرتے‘ اسے پوری طری قبول کرتے اور پوری قوت سے اس کی طرف دعوت دیتے رہے۔ اللہ تعالیٰ ان پر رحمتیں نازل فرمائے۔

وَبِاللّٰہِ التَّوْفِیْقُ وَصَلَّی اللّٰہُ عَلٰی نَبِیَّنَا مُحَمَّدٍ وَآلِہ وَصَحْبِہ وَسَلَّمَ

اللجنة الدائمة۔ رکن: عبداللہ بن قعود، عبداللہ بن غدیان، نائب صدر: عبدالرزاق عفیفی، صدر عبدالعزیز بن باز

فتویٰ (۹۴۵۰)

 

 

فتاوی بن باز رحمہ اللہ

جلددوم -صفحہ 168

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ