سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

تحلل اول سے قبل جماع

  • 8993
  • تاریخ اشاعت : 2013-12-25
  • مشاہدات : 242

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
کیا اس شخص کے لیے دوبارہ حج کرنا واجب ہے جو تحلل اول سے قبل ہی اپنی بیوی سے جماع کر لے، جبکہ اس کا یہ حج نفل ہو؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا اس شخص کے لیے دوبارہ حج کرنا واجب ہے جو تحلل اول سے قبل ہی اپنی بیوی سے جماع کر لے، جبکہ اس کا یہ حج نفل ہو؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جو شخص تحلل اول سے قبل بیوی سے صحبت کر لے، اس کا حج فاسد ہو جاتا ہے لیکن اس حج کو پورا کرنا چاہیے اور بعد میں اس کی قضا بھی دینا چاہیے خواہ حج نفل ہی ہو، چنانچہ اس مسئلہ میں حضرات صحابہ کرام رضی اللہ عنھم کا بھی یہی فتویٰ ہے، نیز اسے ایک اونٹ ذبح کر کے مکہ مکرمہ کے فقراء میں تقسیم کر دینا چاہیے۔

هذا ما عندي والله اعلم بالصواب

فتوی کمیٹی

محدث فتوی

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ