سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(182) چھٹا سوال

  • 8476
  • تاریخ اشاعت : 2013-12-16
  • مشاہدات : 568

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

چھٹی:

﴿ قُل فَمَن يَملِكُ مِنَ اللَّهِ شَيـًٔا إِن أَر‌ادَ أَن يُهلِكَ المَسيحَ ابنَ مَر‌يَمَ وَأُمَّهُ وَمَن فِى الأَر‌ضِ جَميعًا...١٧﴾... سورة المائدة

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اس آیت  کا آغا ز  ان الفاظ  سے ہو تا ہے کہ :

﴿لَقَد كَفَرَ‌ الَّذينَ قالوا إِنَّ اللَّهَ هُوَ المَسيحُ ابنُ مَر‌يَمَ...١٧﴾... سورة المائدة

جو لوگ  اس با ت کے قا ئل ہیں کہ حضرت  عیسی بن مر یم علیہ السلام  اللہ ہیں   وہ بے شک کا فرہیں '' تو گویا (قُلْ فَمَن يَمْلِكُ مِنَ اللَّـهِ شَيْئًا)کہہ کہ ان  لو گوں کی تردید کی جا رہی ہے جنہوں نے  حضرت عیسی علیہ السلام  کے اللہ ہو نے کا دعو ی کیا  اور بیا ن یہ کیا جا رہا ہے  کہ حضرت عیسی علیہ السلام اور  ان کی والدہ  تو اللہ تعالیٰ ٰ کی دیگر مخلوق کی طرح   اس کے دو ضعیف بندے ہیں   ،اگر اللہ تعالیٰ ٰ انہیں ان کی والدہ  کو زمین کی  تمام مخلوقات  کو ہلاک  کر نا   چا ہے  تو  وہ ایسا  کر  سکتا   ہے  لیکن اللہ تعالیٰ ٰ نے  اس طرح  سب  کو  یکجا  ہلاک  نہیں  کیا بلکہ   اپنی  حکمت   و مصلحت  سے ہر ایک  کی موت  کے اوقا ت  مقرر  کر دیئے  اور یہ بھی اس کی حکمت و مصلحت  ہی سے ہو ا کہ یہودیوں  نے جب حضرت  عیسی علیہ السلام  کی مو ت  کی سا زش کی تو اللہ تعالیٰ ٰ  نے انہیں  آسمانو ں  پر زندہ اٹھا لیا   اور اب تک زندہ  رکھا ہو ا ہے  حتی کہ وہ آخر زمانے میں  نازل ہوں گے  لو گو ں میں  حضرت محمد ﷺ   کی شر یعت  کے  مطا بق  فیصلے  کر یں  گے  اور  پھر  اس کے  بعد  اللہ تعالیٰ ٰ  انہیں  فو ت  کر ے گا جیسا کہ قبل   ازیں بیا ن  کیا جا چکا ہے ۔

هذا ما عندي والله اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج1 ص38

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ