سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(229) ایک بینک نے طلبہ فنڈ زکی حفاظت کی پیشکش کی ہے۔۔۔

  • 7594
  • تاریخ اشاعت : 2013-11-02
  • مشاہدات : 518

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک بینک نے طلبہ فنڈز کے ذمہ داروں کے سامنے یہ پیشکش کی ہے کہ اگر وہ ان فنڈز کو بینک کے پاس رکھیں توبینک نہ صرف یہ کہ ان کی حفاظت کرے گا بلکہ بینک اس فنڈمیں مددبھی دے گاتوکیا یہ جائزہے کہ ہم اس فنڈکی رقوم کو بینک میں محض حفاظت کے لئے رکھ دیں؟بلاشبہ بینک ضروران رقوم کو اپنے کام میں لائے گااوران سے سرمایہ کاری کرے گا۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

یہ کام جائز نہیں ہے کیونکہ یہ تو عین سود ہے حقیقت یہ ہے کہ بینک طلبہ فنڈ کو ان رقوم کے عوض ایک طے شدہ سوداداکرے گااگرچہ بینک نے تلبیس،دھوکے اورپردہ پوشی سے کام لیتے ہوئے سودکا نام مددرکھ لیا ہے اورسودسودہے،خواہ لوگ اس کا کوئی بھی نام رکھ لیں۔۔۔۔۔۔واللہ المستعان۔

 

 

مقالات وفتاویٰ ابن باز

صفحہ 321

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ