سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(721) جہاں امام نہ ہو نہ جماعت تو جنگلوں کو نکل جائو...الخ

  • 7274
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-27
  • مشاہدات : 690

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

امام کے ماننے والوں میں یہ حدیث بہت زور کے ساتھ بیان کی جاتی ہے۔ کہ جہاں امام نہ ہو نہ جماعت تو جنگلوں کو نکل جائو جڑیں چبائو۔ پتے کھائو۔ وغیرہ وغیرہ اس حدیث کا صحیح مطلب کیا ہے؟ (عبدالعزیز آذاددہلی)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

 

بخاری شریف میں یہ حدیث ہے۔ اور امام بخاری رحمۃ اللہ علیہ نے اس پر باب باندھا ہے۔ اذا لم يكن امام ولا جماعة اس موقع پر ارشاد نبوی ﷺیہ ہے۔ فاعتزل تلك الفرق كلها ان مختلف ٹولیوں سے الگ ہوجائو۔ چاہے تم کودرختوں کی چھال کھا کر گزارہ کرنا پڑے۔ یہ مطلب نہیں کہ تم خوامخواہ جنگلوں میں چلے جائو۔ بخاری شریف کے اس باب کو غور سے پڑھیے۔ اور نتیجہ پایئے۔ (اہلحدیث امرتسر جلد 44 نمبر9)

 


فتاویٰ ثنائیہ

جلد 2 ص 613

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ