سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(421) قرآن و حدیث پڑھانے پر تنخواہ

  • 7037
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-08
  • مشاہدات : 360

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

قرآن و حدیث پڑھانے کا عوض مزدوری یا تنخواہ یعنی جائز ہے یا نہیں ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

صحیح حدیث میں آیا ہے احق ما اخذ تم عليه اجرا کتاب الله سب سے اچھی مزدوری کتاب اللہ پر ہے اس لئے اگر کوئی مزدری کے لئے پڑھا دے تو جائز ہے ہاں اگر کوئی فی سبیل اللہ پڑھا دے تو پھر مزدوری مانگنا جائز نہیں ، از خودہ احسان کریں ، تو قبول کرے منع کے متعلق کوئی حدیث نہیں۔

  ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ امرتسری

 

جلد 2 ص 403

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ