سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(470) کمیشن پر تجارت جائز ہے

  • 7023
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-06
  • مشاہدات : 293

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
ایک شخص اس شرط پر روپیہ دیتا ہے کہ فی من غلہ یا کسی چیز میں مقرر فی من آٹھ آنے یا چھ آنے کے حساب سے کمیشن لیں گے ، روپیہ دینے کی عوض ، اور اس غلہ میں نفع ہو یا نقصان ہو سو ہمارے ذمہ رہا ، کیا شرح شریف میں اس قسم کا لین دین جائز ہے؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک شخص اس شرط پر روپیہ دیتا ہے کہ فی من غلہ یا کسی چیز میں مقرر فی من آٹھ آنے یا چھ آنے کے حساب سے کمیشن لیں گے ، روپیہ دینے کی عوض ، اور اس غلہ میں نفع ہو یا نقصان ہو سو ہمارے ذمہ رہا ، کیا شرح شریف میں اس قسم کا لین دین جائز ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جائز ہے کمیشن فروخت کرنے کی دلالی ہے سودا نہیں،  (۲۴جون ۱۹۳۲ء؁)

فتاویٰ ثنائیہ

جلد 2 ص 392

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ