سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(438) کیا ماں ولی ہو سکتی ہے؟

  • 6991
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-05
  • مشاہدات : 524

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

زینب کے بھائی کی موجودگی میں اس کی ماں ولی ہوسکتی ہے یا نہیں؟ اگر ان کی ماں زینب کے کے بھائی سے چھپا کر زید سے شادی کرادے تو شادی شرعا جائز ہے یا نہیں؟ شادی کے وقت زینب کی عمر آٹھ سال دس مہینہ تھی۔ اب اس کی عمر گیارہ سال نو مہینے ہوئی اس وقت شادی سے انکار کرتی ہے۔ کہ میری شادی ہوئی نہیں۔ اس صورت میں زینب زید کی زوجیت میں رہے گی یا نہیں۔ بینوا توجروا


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بھائی عصبہ ولی ہے۔ اس کی موجودگی میں ماں ولی نہیں ہوسکتی۔ لہذا نکاح جائز ہے۔ اور لڑکی بعد بلوغ انکار کرسکتی ہے۔ نکاح فسخ ہوجائے گا گو پہلے بھی ناجائز تھا۔  (اہلحدیث امرتسر 13۔ 10 جنوری 1933ء)

شرفیہ

صورت مرقومہ میں سرے سے نکاح منعقد ہی نہیں ہوا کہ بلاولی کیاگیا ہے۔ بحدیث لانکاح الا بولی۔ الحدیث (ابو سعید شرف الدین دہلوی)

فتاویٰ ثنائیہ

جلد 2 ص 352

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ