سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(252) آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کو علم ما کان وما یکون تھا یا نہیں ؟

  • 6461
  • تاریخ اشاعت : 2013-08-13
  • مشاہدات : 565

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کو علم ما کان وما یکون تھا یا نہیں ؟ حالانکہ ایک روایت میں آتا ہے۔قال رسول الله صلى الله عليه وسلم انى رايت ربى عزوجل فى احسن ٍصورت قال فيم يختصم الا على قلت انت اعلم فوضع كفه بين لتفى فوجدت بردها مابين ثدينى فعلمت مافى السموات والارض ( لحدیث مشکوۃ جلد 1 ص ۷۰۶۹ )

اس حدیث سے صریح ظاہر ہے۔ کہ  آپؐ کو علم ما کان وما یکون تھا۔اور آپؐ عالم غیب السموت والا رض تھے


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

آپؐ کو علم وما کان وما یکون نہیں ۔اور حدیث فيم يختصم الا على سے صرف آسمان و زمین میں موجود اشیاء کا علم کلی معلوم ہوتا ہے۔جو ہوچکی ہیں یا آئندہ ہونے والی ہے۔ ان کاعلم ثابت نہیں ہوتا ۔اور اس کی موید بخاری کی حدیث کوثر بھی ہے۔ جو جواب نمبر۵ میں گزر چکی ہے اور آیات و واقعات اور دیگر احادیث سے بھی یہی ثابت ہوتا ہے۔کہ آپؐ کو بعض اشیاء کا علم ہے نہ کہ خدا کی طرح کل اشیاء کا ۔چنانچہ چندا مثلہ جواب نمبر۱ میں گزر چکی ہیں ۔ (فتاوی روپڑی جلد اول ص ۲۲۰ ،۲۲۱ )


فتاوی علمائے حدیث

جلد 10 ص 24

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ