سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(613) ایسی حالت میں بیسواں حصہ عشر دے تو جائز ہوگا یا نہیں؟

  • 6411
  • تاریخ اشاعت : 2024-04-23
  • مشاہدات : 823

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہمارے یہاں خراج  (سرکاری مالیہ)  پورا لگتا ہے۔ قریبا اس زمانے میں چھ حصے کے طور پر پڑتا ہے۔ ایسی حالت میں بیسواں حصہ عشر دے تو جائز ہوگا یا نہیں؟  (زین العابدین از تربہوم)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

ایسی حالت میں نصف عشر یعنی بیسواں حصہ ادا کردینا کافی ہے۔ 

  ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ  ثنائیہ امرتسری

جلد 01 ص 754

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ