سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(467) سگریٹ پینے والے کی امامت

  • 6110
  • تاریخ اشاعت : 2013-07-29
  • مشاہدات : 692

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

زید مسجد اہل حدیث کا مام نماز ہے۔ ہمیشہ بیڑی سگریٹ پیا کرتا ہے۔ خارج مسجد میں بھی اور گلی کوچوں میں بھی پیتا  پھرتا ہے۔ لوگ فتوی ٰ پوچھتے ہیں کہ بیڑی سگریٹ پینے والے کے پیچھے نماز ہوجاتی ہے۔ ؟خصوصا نمازسے 15 یا 10 منٹ پہلے بیڑی یا سگریٹ پی کر وضو کر کے نماز پڑھاتا ہے۔ آیا ایسا شخص امامت کے لئے سزاوار ہے یا نہیں۔ ؟ تمباکو حلال ہے یا حرام؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

تمباکو پینا منع ہے حدیث شریف میں آیا ہے۔

نهي رسول الله صلي الله عليه وسلم عن المبفر  یعنی مفتر (1) چیز سے آپ ﷺ نے منع فرمایا ہے۔ امام جماعت کو ترک کردیناچاہیے ۔ اگروہ نماز پڑھائے تو نماز ہوجاتی ہے۔  (اہلحدیث امرتسر ص13 19 مئی 1939)

-----------------------------------------

1۔ دکاغ میں فتور اور نشہ پیدا کرنے والی چیز جس سے دماغ  میں چکر پیدا ہوجائے۔ 12منہ

 

فتاویٰ  ثنائیہ

جلد 01 ص 527

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ