سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(402) سویا ہواآدمی اس وقت جاگے جس وقت آفتا ب..الخ

  • 6045
  • تاریخ اشاعت : 2013-07-28
  • مشاہدات : 386

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

سویا ہواآدمی اس وقت جاگے جس وقت آفتا ب طلوع یا غروب ہورہا ہو تو ایسے شخص کو اسی وقت نماز پڑھنی ہوگی یا تھوڑی دیر رکے تاکہ آفتاب پورا طلوع یا غروب ہوجائے۔ ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

حدیث شریف میں آیا ہے نیند میں قصور نہیں۔ مسلمان اگر نیند میں بے اختیا پڑا رہے۔ تو جس وقت جاگے وہی اس کا وقت ہے۔ اس کے  بعد علماء دوگرہوں ہوگئے ہیں۔ ایک گروہ تو یہی کہتا ہے۔ کہ جب جاگے پڑھ لے۔ دوسرا گروہ کہتا ہے کہ اوقات مکروہہ میں نہ پڑھے۔ بلکہ زرا دیر بعد جائز اوقات میں پڑھے۔ ان دونوں خیالوں میں سے جوخیال کسی کو پسند ہو اختیار کرے۔ واللہ اعلم۔ (8 ربیع الاول 1347ہجری)


فتاویٰ  ثنائیہ

جلد 01 ص 451

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ