سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(352) صحیح حدیث کے مقابلے اپ]نے امام کا قول پکڑنا

  • 5995
  • تاریخ اشاعت : 2013-07-28
  • مشاہدات : 439

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

صحیح حدیث کے ساتھ جو کوئی اپنے امام کے قول کا مقابلہ کرے اگر موافق ہو تو مانے ورنہ حدیث کو چھوڑ کر اپنے امام کے قول پر اڑا رہے۔ ایسے لوگ مشرک ہیں یا کافر؟(عبد اللہ  الباغ دینا جپور)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

ایک شرک باللہ ہے ایک شرک بالرسول ہے۔ یعنی جو عبادت میں کسی غیر کوملاوے اس کا فعل شرک باللہ ہے ۔ اور جو اطاعت میں رسول کے ساتھ کسی کو ملاوے۔ اس کا فعل شرک  فی الرسالت ہے۔ پس مذکور شخص کا فعل قسم دوم سے ہے۔ (اہل حدیث 16 جون 16ھ)


فتاویٰ  ثنائیہ

جلد 01 ص 387

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ