سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(721) مساجد میں منبر پر پہلی یا دوسری سیڑھی پر قرآنِ مجید رکھنا

  • 5089
  • تاریخ اشاعت : 2013-06-29
  • مشاہدات : 626

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
مساجد میں منبر پر پہلی یا دوسری سیڑھی پر قرآنِ مجید رکھ دیا جاتا ہے ، حالانکہ اسی سیڑھی پر تقریر کرتے ہوئے          قدم رکھے جاتے ہیں کیا یہ قرآن کے ادب کے خلاف ہے؟         (محمد سلیم بٹ)

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

مساجد میں منبر پر پہلی یا دوسری سیڑھی پر قرآنِ مجید رکھ دیا جاتا ہے ، حالانکہ اسی سیڑھی پر تقریر کرتے ہوئے          قدم رکھے جاتے ہیں کیا یہ قرآن کے ادب کے خلاف ہے؟         (محمد سلیم بٹ)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

قرآنِ مجید شعائر اللہ میں شامل ہے۔ اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے: {وَمَنْ یُّعَظِّمْ شَعَآئِرَ اللّٰہِ فَاِنَّھَا مِنْ تَقْوَی الْقُلُوْبِ ط [الحج:۳۲]} [ ’’ اور جو اللہ کی نشانیوں کی عزت کرے اس کے دل کی پرہیزگاری کی وجہ سے یہ ہے۔ ‘‘ ] تو جہاں قرآنِ مجید رکھنے سے قرآنِ مجید کی بے حرمتی و بے ادبی نکلتی ہو وہاں قرآنِ مجید کو رکھنا درست نہیں۔

اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے: {لَا تُحِلُّوْا شَعَآئِرَ اللّٰہِ ط }[المآئدۃ:۲] [ ’’ اے ایمان والو! اللہ تعالیٰ کے نشانوں کی بے حرمتی نہ کرو۔ ‘‘ ]                                                  ۱۳ ؍ ۱۱ ؍ ۱۴۲۳ھ

 

قرآن وحدیث کی روشنی میں احکام ومسائل

جلد 02 ص 720

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ