سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(503) اعتکاف کا ثواب دو حج اور دو عمروں کے برابر ہے؟

  • 4871
  • تاریخ اشاعت : 2013-06-26
  • مشاہدات : 599

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اعتکاف کا ثواب دو حج اور دو عمروں کے برابر ہے ، کیا یہ صحیح حدیث سے ثابت ہے؟

                                                                   (ملک محمد یعقوب)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

:… اعتکاف کے اجرو ثواب والی یہ روایت کمزورہے۔ 1

اعتکاف رسول اللہ  صلی الله علیہ وسلم کی سنت ہے۔ ہر سال رسول اللہ  صلی الله علیہ وسلم اعتکاف کیا کرتے تھے۔ صحیح بخاری میں ہے:

(( کَانَ النَّبِیُّ  صلی الله علیہ وسلم یَعْتَکِفُ فِیْ کُلِّ رَمَضَانَ عَشَرَۃَ اَیَّامٍ فَلَمَّا کَانَ العَامُ الَّذِیْ قُبِضَ فِیْہِ اِعْتَکَفَ عِشْرِیْنَ یَوْمًا۔ ))2

’’ نبی  علیہ السلام ہر رمضان دس دن اعتکاف کرتے، جس سال آپؐ فوت ہوئے ، آپ نے بیس دن اعتکاف کیا۔‘‘

قرآنِ مجید میں ہے:

{ مَنْ جَآئَ بِالْحَسَنَۃِ فَلَہٗ عَشْرُ أَمْثَالِھَا ط}               [الانعام:۱۶۰]

’’ جو شخص نیک کام کرے گا ، اس کو اس کے دس گنا ملیں گے۔‘‘

 اورحدیث میں ہے:

(( اِنَّ اللّٰہَ عَزَّوَجَلَّ کَتَبَ الْحَسَنَاتِ وَالسَّیِّئَاتِ ثُمَّ بَیَّنَ ذٰلِکَ فَمَنْ ھَمَّ بِحَسَنَۃٍ فَلَمْ یَعْمَلْھَا کَتَبَھَا اللّٰہُ لَہٗ عِنْدَہٗ حَسَنَۃً کَامِلَۃً فَاِنْ ھَمَّ بِھَا وَعَمِلَھَا کَتَبَھَا اللّٰہُ لَہٗ عِنْدَہٗ عَشْرَ حَسَنَاتٍ إِلٰی سَبْعِ مِائَۃِ ضِعْفٍ اِلٰی أَضْعَافٍ کَثِیْرَۃٍ۔ ))3

’’ بے شک اللہ نے لکھا ہے نیکیوں اور برائیوں کو پس جو نیکی کا ارادہ کرے، اللہ اس کی ایک نیکی لکھ لیتا ہے اور اگر بندہ نیکی کا ارادہ کرنے کے بعد نیکی کرتا ہے تو اللہ اسے دس سے لے کر سات سو تک اور اس سے بھی زیادہ نیکیاں عطا فرماتے ہیں۔‘‘                                        ۹ ؍ ۱۰ ؍ ۱۴۲۲ھ

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

1 موضوع ؍ سلسلۃ الاحادیث الضعیفۃ والموضوعۃ ؍ المجلد الثانی : ۵۱۸

2 صحیح بخاری ؍ کتاب الاعتکاف ؍ باب الاعتکاف فی العشر الاوسط من رمضان

3 بخاری ؍ کتاب الرقاق ؍ باب من ھم بحسنۃ او بسیئۃ

قرآن وحدیث کی روشنی میں احکام ومسائل

جلد 02 ص 441

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ