سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(347) محلے سے صرف ایک آدمی کا اعتکاف کافی ہے؟

  • 4180
  • تاریخ اشاعت : 2013-06-15
  • مشاہدات : 337

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
رمضان المبارک میں اعتکاف اگر ایک ہی شخص محلے کا کرے تو کیا سب کی طرف سے کافی ہے؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

رمضان المبارک میں اعتکاف اگر ایک ہی شخص محلے کا کرے تو کیا سب کی طرف سے کافی ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

حنفیہ کے نزدیک اعتکاف سنت کفایہ ہے، ان کے نزدیک تو ایک کا بیٹھنا سب سے کفایت کرتا ہے، مگرا س دعوے کی دلیل میرے ناقص علم میں نہیں، اس لیے اس کو عین سنت جانتا ہوں۔ آنحضرت ﷺ کی ساری بیویاں معہ آنحضرت ﷺ کے اعتکاف بیٹھتی تھیں۔ گو آپ ﷺ نے ان کو اٹھا دیا تھا۔ مگر اس کی وجہ کچھ اور تھی۔ (۲۳ ربیع الثانی ۳۸ ھ) (فتاویٰ ثنائیہ جلد ۱ ص ۴۱۳)

 


فتاویٰ علمائے حدیث

جلد 06 ص 458

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ

ABC