سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(142) نماز تراویح سے پہلے عشاء کے سنت و نوافل یا بعد میں

  • 4105
  • تاریخ اشاعت : 2013-06-14
  • مشاہدات : 472

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
جو شخص نماز عشاء بغیر جماعت کے ادا کرے، اور علاوہ فرض کے سنت اور نفل بھی پڑھے تو اس شخص کو نماز تراویح کس وقت میں پڑھنی چاہیے۔ یعنی کیا وہ پہلے نماز عشاء کی بارہ رکعت پڑھ کر پھر تراویح پڑھ کر پھر وتر اور اس کے بعد نفل ادا کرے؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جو شخص نماز عشاء بغیر جماعت کے ادا کرے، اور علاوہ فرض کے سنت اور نفل بھی پڑھے تو اس شخص کو نماز تراویح کس وقت میں پڑھنی چاہیے۔ یعنی کیا وہ پہلے نماز عشاء کی بارہ رکعت پڑھ کر پھر تراویح پڑھ کر پھر وتر اور اس کے بعد نفل ادا کرے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بعد نماز عشاء کے تراویح پڑھے، یا بعد نیند بوقت سحری پڑھے، ہر دو جائز ہے۔

(۱۷ شوال ۱۳۳۹ھ) (فتاویٰ ثنائیہ جلد ۱ ص ۴۳۱)



فتاویٰ علمائے حدیث

جلد 06 ص 330

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ