سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

جسم کے کسی حصے سے خون کے نکلنے سے روزہ کا حکم

  • 352
  • تاریخ اشاعت : 2011-12-07
  • مشاہدات : 298

سوال

سوال: اگر دانتوں میں سے خون نکلے اور اسکا ٹیسٹ (taste) بھی محسوس ہو تو کیا روزہ ٹوٹ جاتا ہے ؟ اور جسم کے کسی اور جگہ سے خون نکلے جیسے کہیں کوٹ جائے تو پھر کیا حکم ہے ؟

جواب:
شیخ صالح المنجد اس بارے ایک سوال کے جواب میں فرماتے ہیں:
سوال ؛ کیا دانتوں سے نکلنے والا خون روزہ فاسد کرتا ہے کہ نہيں ؟ اوراگر کوئي انسان کسی دوسرے کو زد کوب کرے جس سے اس کے دانتوں سے خون جاری ہوجائے توکیا روزے پرکچھ اثر ہوگا ؟ اللہ تعالی آپ کو جزائے خیر عطا فرمائے

الحمد للہ
دانتوں سے نکلنے والاخون روزے پر اثرانداز نہيں ہوتا اورنہ ہی اس سے روزہ ٹوٹتا ہے ، چاہے وہ خود نکلے یا کسی کے زدکوب کرنے سے ۔
اللہ تعالی ہی توفیق بخشنے والا ہے اللہ تعالی ہمارے نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم ان کی آل اورصحابہ کرام پر اپنی رحمتیں نازل فرمائے ۔
دیکھیں : فتاوی اللجنۃ الدائمۃ للبحوث العلمیۃ والافتاء ( 10 / 267 ) ۔
لیکن روزے دار پر اس خون کو نگلنا حرام ہے ، اوراگر اس نے جان بوجھ کر نگل لیا توروزہ ٹوٹ جائے گا ۔
واللہ اعلم .
الاسلام سوال وجواب

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ