سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(26) زلزلے کی دعا

  • 2858
  • تاریخ اشاعت : 2013-04-23
  • مشاہدات : 1907

سوال




السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
زلزلے کے وقت کون سی دعا پڑھنی چاہئے۔؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

زلزلے کے وقت کون سی دعا پڑھنی چاہئے۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

زلزلے کے وقت کوئی مخصوص دعا نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے صراحت کے ساتھ ثابت نہیں ہے ۔البتہ خیر وبھلائی کی تمام دعائیں پڑھی جا سکتی ہیں۔

زلزلہ اللہ کے عذاب میں سے ایک عذاب ہے،زلزلہ کے وقت تضرع ،خشوع و خضوع کے ساتھ کثرت سے توبہ واستغفار دعا اور صدقہ کر نا چاہئے اور قرآن وسنت سے ثابت دعائیں پڑھنی چاہئے۔نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم بلاؤں و آفات سے حفاظت کے لئے صبح وشام یہ دعا پڑھا کرتے تھے۔

« اللَّهُمَّ إِنِّى أَسْأَلُكَ الْعَافِيَةَ فِى الدُّنْيَا وَالآخِرَةِ اللَّهُمَّ إِنِّى أَسْأَلُكَ الْعَفْوَ وَالْعَافِيَةَ فِى دِينِى وَدُنْيَاىَ وَأَهْلِى وَمَالِى اللَّهُمَّ اسْتُرْ عَوْرَاتِى وَآمِنْ رَوْعَاتِى اللَّهُمَّ احْفَظْنِى مِنْ بَيْنِ يَدَىَّ وَمِنْ خَلْفِى وَعَنْ يَمِينِى وَعَنْ شِمَالِى وَمِنْ فَوْقِى وَأَعُوذُ بِعَظَمَتِكَ أَنْ أُغْتَالَ مِنْ تَحْتِى » ( سنن أبوداود : 5074 ، الأدب ، سنن إبن ماجة : 3871 ، الدعاء ، مسند أحمد : 2/25 )

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الطہارہ جلد 2

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ