سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(15) ہر سورت کی ابتداء میں بسم اللہ پڑھنا

  • 26108
  • تاریخ اشاعت : 2018-05-09
  • مشاہدات : 172

سوال

 السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

یہ خاکسار باتباع امام عاصم کوفی ہرسورۃ کے ابتدا میں تراویح کے دوران قرآن پاک ختم کرتے ہوئے بسم اللہ پڑھتا ہے دوسرے سےحفاظت سے دورہ کرتے ہوئے سورۃ کے ابتدا میں بسم اللہ پڑھنے کا  تذکرہ ہواتو انہوں نے اس کا انکار کیا اور کہا کہ اساتذہ نے ہمیں یہ نہیں بتلایا تم یہ چیز نئی پیدا کررہے ہوفرمایا جائے کہ حق کیا ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

عبدالغنی شاہ صاحب اور میرے والد ہرسورت کے ابتدا میں رفع اختلاف کے لیے بسم اللہ پڑھ لیاکرتے تھے بسم اللہ ہر سورۃ کے ابتدا میں پڑھنا مکروہ نہیں ہے تمام علمائے احناف کا اس پر اتفاق ہے خواہ نمازسری ہو یا جہری اگر اختلاف ہے تو صرف اس کے مسنون ہونے میں ہے ذخیرہ مجتبیٰ میں ہے کہ امام ابو حنیفہ  رحمۃ اللہ علیہ  کے نزدیک بسم اللہ کا ہرسورۃ کے ابتدا میں پڑھنا بہتر ہے۔ابن ہمام اورحلبی نے اس کو  ترجیح دی ہے۔واللہ اعلم۔

     ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

فتاوی نذیریہ

جلد:2،کتاب الاذکار والدعوات والقراءۃ:صفحہ:50

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ