سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(300) زید مجرد زندگی بسر کرتا ہے اس کی عمر ساٹھ (۶۰) سال کی ہے اس کی شادی ہو ہی نہ سکی کیا اس کے پیچھے نماز جائز ہے؟ علم شریعت جانتا ہے۔

  • 2585
  • تاریخ اشاعت : 2013-02-23
  • مشاہدات : 930

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

زید مجرد زندگی بسر کرتا ہے اس کی عمر ساٹھ (۶۰) سال کی ہے اس کی شادی ہو ہی نہ سکی کیا اس کے پیچھے نماز جائز ہے؟ علم شریعت جانتا ہے۔


 

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

زید نکاح کا منکر نہیں ہے کوشش کے باوجود نکاح نہیں ہو سکا اس میں زید کا اپنا کوئی قصور نہیں ہے امامت کے شرعی اوصاف سے وہ متصف ہے تو اس کی امامت جائز ہے۔ ہذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب۔ (حررہ محمد صدیق سرگودہا، تنظیم اہل حدیث جلد نمبر ۲۱ شمارہ نمبر ۱۷)

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الصلاۃجلد 1 ص228
محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ