سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(721) کسی کی آمد پر کھڑے ہونے کا شرعی حکم

  • 25836
  • تاریخ اشاعت : 2018-04-25
  • مشاہدات : 38

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
اکثر تعلیمی اداروں میں یہ رائج ہو چکا ہے کہ استاد جب کلاس روم میں داخل ہوتا ہے ، تو بچے اس کے ادب میں کھڑے ہو جاتے ہیں، کیا یہ جائز ہے ؟ قرآن و حدیث کی روشنی میں جواب مرحمت فرمائیں۔(محمد بلال کمبوہ آف کچا پکا) ( ۱۶ فروری ۲۰۰۱ئ)

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اکثر تعلیمی اداروں میں یہ رائج ہو چکا ہے کہ استاد جب کلاس روم میں داخل ہوتا ہے ، تو بچے اس کے ادب میں کھڑے ہو جاتے ہیں، کیا یہ جائز ہے ؟ قرآن و حدیث کی روشنی میں جواب مرحمت فرمائیں۔(محمد بلال کمبوہ آف کچا پکا) ( ۱۶ فروری ۲۰۰۱ئ)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

 بچوں کا اس طرح کھڑے ہونا ناجائز ہے ، حدیث میں ہے:

’مَنْ سَرَّهٗ اَنْ یَّتَمَثَّلَ لَهُ الرِّجَالُ فَلْیَتَبَوَّأْ مَقْعَدَهٗ مِنَ النَّارِ‘سنن الترمذی،بَابُ مَا جَاء َ فِی کَرَاهِیَةِ قِیَامِ الرَّجُلِ لِلرَّجُلِ،رقم:،۲۷۵۵ سنن ابی داؤد،بَابٌ فِی قِیَامِ الرَّجُلِ لِلرَّجُلِ، رقم:۵۲۲۹

’’جو شخص پسند کرتا ہے کہ لوگ اس کے احترام میں مجسمہ بنے کھڑے رہیں پس اسے اپنا ٹھکانا جہنم میں بنا لینا چاہیے۔‘‘

     ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

جلد:3،کتاب اللباس:صفحہ:512

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ