سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(438) نبی کریمﷺ کو عمرہ کرنے کا خواب

  • 25553
  • تاریخ اشاعت : 2018-04-03
  • مشاہدات : 111

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

قرآن میں ہے﴿ لَقَدْ صَدَقَ اللّٰهُ رَسُوْلَهٗ الرُّؤْیَا بِالْحَقِّ لَتَدْخُلُنَّ الْمَسْجِدَ الْحَرَامَ﴾ ’’یعنی رسول اللہﷺ کا خواب عمرہ کرنے کے متعلق۔ چنانچہ آپﷺ اسی ارادہ سے نکلے مگر مشرکین مکہ نے آپ کو واپس کردیا۔ دونوں باتیں متضاد ہیں۔ یعنی قرآن بھی درست ہے۔ آپ کا خواب بھی سچا۔ مگر اس سال آپﷺ عمرہ نہ کر سکے۔ وضاحت و تشریح مطلوب ہے؟ (۱۵ نومبر ۱۹۹۶)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

خواب میں آپﷺ کو عمرہ کی صرف بشارت دی گئی تھی۔ وقت کا تعین نہیں تھا۔ اس صداقت کا اظہار سن سات ہجری کو ہو گیا۔ ﴿یَفْعَلُ مَا یَشَآءُ ﴾(اٰل عمرٰن:۴۰)

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

جلد:3،کتاب الصوم:صفحہ:344

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ