سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(352) زمین کا عشر ٹھیکیدار ادا کرے گا یا کاشتکار؟

  • 25467
  • تاریخ اشاعت : 2018-03-31
  • مشاہدات : 203

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جو زمین ٹھیکہ پر دی جائے اس کے بارے میں عشر کا کیا حکم ہو گا مالک زمین عشر دے یا ٹھیکہ پر لینے والا یا دونوں، مزید یہ کہ مالک زمین کس حساب سے عشر ادا کرے یا پھر وصول شدہ رقم کا دسواں حصہ عشر دے دے؟ (محمد یحییٰ عزیز کوٹ رادھا کشن،قصور) (۱۵ جولائی ۱۹۹۴ء)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

زمین ٹھیکہ پر لینے والا آدمی پہلے ٹھیکہ وضع کرے پھر باقی آمدن پر عشر ادا کرے۔ مالک زمین پر عشر نہیں۔ وہ صرف حاصل شدہ رقم سے سال گزرنے پر زکوٰۃ ادا کرے گا بشرطیکہ وہ سال بھر جمع رہے۔

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

جلد:3،کتاب الصوم:صفحہ:302

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ