سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(130) تدفین کے بعد کیا قبر پر پانی چھڑکا جا سکتا ہے ؟

  • 25245
  • تاریخ اشاعت : 2024-04-19
  • مشاہدات : 823

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

میت کو دفن کرنے کے بعد قبرپر پانی چھڑکنا کیا صحیح احادیث سے ثابت ہے ؟ (سائل) (۳۰ مئی ۲۰۰۳ء)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

میت کو دفن کرنے کے بعد قبر پر پانی چھڑکنے والی بعض روایات میں کلام ہے۔ البتہ عبدالعزیز دراوردی عن جعفر بن محمد عن ابیہ کے طریق کو علامہ البانی رحمہ اللہ  نے ’’ارواء الغلیل‘‘(۲۰۶/۳) میں سند کے اعتبار سے صحیح قرار دیا ہے۔ اور جعفر بن محمد عن ابیہ سے دوسرے طریق کے بارے میں فرماتے ہیں کہ ’’یہ سند مرسل صحیح ہے۔‘‘  یہ دونوں طریق ’’سنن کبریٰ بیہقی‘‘ میں ہیں جو عمل ہذا کے جواز پر دلالت کرتے ہیں۔

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

جلد:3،کتاب الجنائز:صفحہ:173

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ