سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(179) سقوطِ حمل اور روزہ

  • 23549
  • تاریخ اشاعت : 2024-02-22
  • مشاہدات : 748

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اگر رمضان المبارک میں کیس عورت کا تین چار ماہ کا حمل ساقط ہو جائے تو کیا اس عورت کو روزہ رکھنا جائز ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

مذکورہ عورت کو جب تک نفاس کا خون جاری رہے وہ (حائضہ کی طرح) روزہ نہ رکھے، جو روزے رہ جائیں وہ بعد میں رکھ لے۔

 ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ افکارِ اسلامی

رمضان المبارک اور روزہ،صفحہ:444

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ