سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(181) کیا عشر کے لیے ہر جنس کا پانچ و سق ہونا ضروری ہے؟

  • 22946
  • تاریخ اشاعت : 2024-05-26
  • مشاہدات : 878

سوال

(181) کیا عشر کے لیے ہر جنس کا پانچ و سق ہونا ضروری ہے؟
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

زید نے اپنی اراضی میں مٹر،جو،نخود(چنے) کی کاشت کی ،فرداً فرداً ہر جنس کی پیداوار تین وسق کو نہیں پہنچتی،مگر ہر جنس کی پیداوار مل کر تین وسق ہوجاتی ہے ،تو زکوۃ لازم آئے گی یا کیا اور زکوۃ ہر جنس سے علیحدہ دی جائے گی یاکیا؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

پیدا وار اراضی پر زکوۃ جب فرض ہوتی ہے کہ پیداوار مذکور پانچ وسق یا ا س سے زائد ہو۔پانچ وسق سے کم ہوتو اس میں زکوۃ فرض نہیں ہے اور اس مسئلہ میں اختلاف ہے کہ آیا ہر جنس پانچ پانچ وسق ہو،تب زکوۃ فرض ہے یا سب مل کر پانچ وسق ہوجائے،تب بھی زکوۃ فرض ہوجاتی ہے؟میں اس مسئلے کا جواب دینے کے لیے پوری طرح سے تیار نہیں ہوں،لیکن ظاہراً جہاں تک مجھے معلوم ہوتاہے،یہی ہے کہ ہر جنس پانچ پانچ وسق ہو،تب زکوۃ فرض ہوتی ہے۔واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب۔

 ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

مجموعہ فتاویٰ عبداللہ غازی پوری

کتاب الزکاۃ والصدقات ،صفحہ:357

محدث فتویٰ

تبصرے