سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(33) عمرہ میں طواف وداع واجب ہے؟

  • 21493
  • تاریخ اشاعت : 2017-07-13
  • مشاہدات : 221

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا عمرہ میں طواف وداع واجب ہے؟اور کیا طواف کے بعد مکہ مکرمہ سے کوئی چیز خریدنی جائز ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

عمرہ میں طواف وداع واجب نہیں ہے۔ البتہ افضل ہے۔ اس لیے اگر کوئی شخص بغیر طواف وداع کئے روانہ ہو جاتا ہے تو کوئی حرج نہیں،لیکن حج میں طواف وداع واجب ہے جیسا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا:" تم میں سے کوئی شخص اس وقت تک روانہ نہ ہو جب تک کہ خانہ کعبہ کا طواف نہ کر لے۔"اس کے مخاطب حجاج تھے۔

طواف وداع کے بعد کوئی بھی چیز خرید سکتا ہے یہاں تک کہ کوئی تجارتی سامان بھی خریدسکتا ہے شرط یہ ہے کہ مدت لمبی نہ ہو اگر مدت لمبی ہو جائے تو دوبارہ طواف کرنا ہو گا۔اگر عرف عام میں مدت لمبی نہیں ہوئی ہے تو طواف کا اعادہ نہیں کرے گا۔

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

حج بیت اللہ اور عمرہ کے متعلق چنداہم فتاوی

صفحہ:36

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ