سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(104) طبلے سارنگیاں اور گانا بجانا

  • 21444
  • تاریخ اشاعت : 2024-03-03
  • مشاہدات : 749

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بعض تقریبات میں طبلے، سارنگیاں اور فحش قسم کے گانے گائے جاتے ہیں۔ ایسی تقریبات میں شرکت کا کیا حکم ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

ایسے گانے گانا یا سننا اور طبلے سارنگیاں بجانا حرام ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے فرمایا:

﴿وَمِنَ النّاسِ مَن يَشتَرى لَهوَ الحَديثِ...﴿٦﴾... سورةلقمان

"اور لوگوں میں سے کچھ ایسے ہیں جو بے ہودہ باتیں خریدتے ہیں۔"

اس آیت میں " لَهْوَ الْحَدِيثِ " کی تفسیر گانے بجانے اور آلات طرب طبلے سارنگیاں وغیرہ ہیں۔

عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں:

"اللہ تعالیٰ کی قسم اس آیت میں لَهْوَ الْحَدِيثِ سے مراد گانا بجانا ہے۔" (تفسیر طبری)

معلوم ہوا کہ گانا بجانا، آلات طرب وغیرہ گمراہی کے آلات ہیں اور ایسی تقریبات جہاں ان کا استعمال ہوتا ہے ان میں شرکت نہیں کرنی چاہیے۔

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

آپ کے مسائل اور ان کا حل

جلد3۔کتاب الجامع-صفحہ529

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ