سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(763) مصروفیت کے ساتھ قرآنی تلاوت سننا

  • 19611
  • تاریخ اشاعت : 2017-03-26
  • مشاہدات : 271

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بعض دفعہ میں زیادہ وقت باورچی خانہ میں گزارتی ہوں کیونکہ اپنے خاوند کے لیے کھانا تیار کرنا ہو تا ہے اور اپنے اس وقت سے فائدہ حاصل کرتے ہوئے میں قرآن مجید سننا چاہتی ہوں چاہے وہ ٹیپ سے ہو یا ٹیلی ویژن سے تو کیا میرا یہ عمل ٹھیک ہے؟یا میرے لیے ایسا کرنا غیر مناسب ہے؟ کیونکہ اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں۔

﴿وَإِذا قُرِئَ القُرءانُ فَاستَمِعوا لَهُ وَأَنصِتوا لَعَلَّكُم تُرحَمونَ ﴿٢٠٤﴾... سورةالاعراف

"اور جب قرآن پڑھا جائے تو اسے کان لگا کر سنو اور چپ رہوتاکہ تم پر رحم کیا جائے۔"


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

انسان کے مشغول ہوتے ہوئے ٹیپ یا ٹیلی ویژن سے قرآن کریم سننے میں کوئی حرج نہیں اس کا اس فرمان سے کوئی اختلاف نہیں کہ "فَاسْتَمِعُوا لَهُ وَأَنصِتُوا "غور سے سنو اور خاموش ہو جاؤ) کیونکہ "انصات"(خاموش رہنا) حتی الامکان مقصود ہے اور جو کسی کام میں مصروف ہو وہ اپنی طاقت کے مطابق قرآن کے لیے خاموشی ہی رہے

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

عورتوں کےلیے صرف

صفحہ نمبر 672

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ