سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(174) عورتوں کے لیے رمضان اور غیر رمضان میں امامت کے لیے کسی عورت کو مقرر کرنا

  • 19022
  • تاریخ اشاعت : 2017-03-08
  • مشاہدات : 180

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا عورتوں کے لیے یہ جائز ہے کہ وہ اپنے میں سے کسی عورت کو امام بنائیں جو ان کو رمضان وغیرہ میں نمازپڑھائے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جی ہاں،ایسا کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے،عائشہ، رضی اللہ تعالیٰ عنہا   ام سلمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا  ،اورع ابن عباس رضی اللہ تعالیٰ عنہ  سے روایات مروی ہیں جو اس کے جواز پر دلالت کرتی ہیں لیکن عورتوں کی امام ان کے وسط میں کھڑی ہوگی اورنماز میں  جہری قراءت کرے گی۔(سماحۃ الشیخ عبدالعزیز بن باز  رحمۃ اللہ علیہ )

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

عورتوں کےلیے صرف

صفحہ نمبر 177

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ