سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(06) ولادت کے وقت خون اور پانی سے طبیب اور طیبہ کےآلودہ کپڑوں کا حکم

  • 18854
  • تاریخ اشاعت : 2017-02-28
  • مشاہدات : 276

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیابچے کی ولادت کے وقت بہنے والے پانی یا خون سے آلودہ کپڑوں میں طبیب یا طبیبہ کی نماز درست ہے جبکہ عمل ولادت کی بعض حالتوں کے پیش نظر ہر نماز کے لیے کپڑے تبدیل کرنا مشکل ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

حمدوثنا کے بعدگزارش یہ ہے کہ ایسی صورت میں طبیب یا طبیبہ پاک کپڑے اپنے پاس رکھیں اور بوقت نماز وہ آلودہ کپڑے اتار کر ان پاک کپڑوں میں نماز ادا کریں اس میں کوئی مشقت بھی نہیں ہے۔(سعودی فتویٰ کمیٹی)

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

عورتوں کےلیے صرف

صفحہ نمبر 58

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ