سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(452) رمضان کے دنوں میں اہلیہ سے مباشرت کرنا

  • 18059
  • تاریخ اشاعت : 2017-01-31
  • مشاہدات : 261

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک آدمی رمضان کے دنوں میں اپنی اہلیہ پر واقع ہوا، اور تین دن تک ایسے کرتا رہا۔ اب اس پر کیا واجب ہے؟ اللہ آپ کو اجر دے۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اگر کوئی شخص روزہ رکھ کر مباشرت کرتا ہے، تو یہ ایک بہت بڑی نافرمانی اور گناہ ہے۔ اس پر واجب ہے کہ اس گناہ سے توبہ کرے،ان دنوں کے روزوں کی قضا دے، اور اس کے ساتھ اس پر مغلظ (بھاری اور شدید) قسم کا کفارہ بھی واجب ہے، یعنی ایک غلام آزاد کرنا۔ اگر نہ کر سکے تو دو ماہ کے متواتر روزے رکھنا۔ اگر اس کی طاقت نہ ہو تو ساٹھ مسکینوں کو کھانا کھلائے۔ ہر مسکین کو آدھا صاع (اڑھائی کلو) طعام ملنا چاہئے، اور جتنے دن یہ کام کیا، اتنے دن کا کفارہ ادا کرے۔

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

احکام و مسائل، خواتین کا انسائیکلوپیڈیا

صفحہ نمبر 355

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ