سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(13) دھان میں عشر کا نصاب

  • 17339
  • تاریخ اشاعت : 2016-11-21
  • مشاہدات : 319

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بنگال میں دوقسم کادھان ہوتاہے اور ایک ہی ساتھ ایک ہی موسم میں دونوں قسم کا یہ دھان بودیا جاتاہے۔ لیکن کاٹنے میں تقریبا پانچ مہینہ کافرق ہوتاکیا عشر ان دونوں کا ایک ہی ساتھ دیاجائے گامثلا :کوئی شخص ایسا ہےکہ اس کاہر ایک موسم کادھان مستقل طور نصاب تک نہیں پہنچتا لیکن دوملانے سےنصاب تک پہنچ جاتا ہےتو کیا اس شخص پر عشر واجب ہوگا یا نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

دونوں قسم کےدھانوں میں ہر ایک اگر نصاب (پانچ وسق یعنی :21 من انگریزر سیر سےکچھ اوپر) کےبرابر پیدا ہو تو دونوں کوملانے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہر ایک کاعشر اس کے تیار ہوکر کاٹے جانے کےوقت ادا کردیا جائے اوراگر ہر ایک بقدر نصاب نہیں پیدا ہوا لیکن دونوں کوملانے سے نصاب پور ہوجاتا ہےتودونوں کوملاکر نصاب پورا کیاجائے۔الحاصل جس شخص کے یہاں دھان کےپیدوار کی یہ صورت ہوجو سوال میں درج ہےاس پر عشر واجب ہے۔

وَيُضَمُّ زَرْعُ الْعَامِ الْوَاحِدِ بَعْضُهُ إلَى بَعْضٍ فِي تَكْمِيلِ النِّصَابِ، سَوَاءٌ اتَّفَقَ وَقْتُ زَرْعِهِ وَإِدْرَاكِهِ، أَوْ اخْتَلَفَ. وَلَوْ كَانَ مِنْهُ صَيْفِيٌّ وَرَبِيعِيٌّ، ضُمَّ الصَّيْفِيُّ إلَى الرَّبِيعِيِّ. وَلَوْ حَصَدْت الذُّرَةَ وَالدُّخْنَ، ثُمَّ نَبَتَ أُصُولُهُمَا يُضَمُّ أَحَدُهُمَا إلَى الْآخَرِ فِي تَكْمِيلِ النِّصَابِ؛ لِأَنَّ الْجَمِيعَ زَرْعُ عَامٍ وَاحِدٍ، فَضُمَّ بَعْضُهُ إلَى بَعْضٍ، كَمَا لَوْ تَقَارَبَ زَرْعُهُ وَإِدْرَاكُهُ.
وَتُضَمُّ ثَمَرَةُ الْعَامِ الْوَاحِدِ بَعْضُهَا إلَى بَعْضٍ، سَوَاءٌ اتَّفَقَ وَقْتُ إطْلَاعِهَا وَإِدْرَاكِهَا، أَوْ اخْتَلَفَ، فَيُقَدَّمُ بَعْضُهَا عَلَى بَعْضٍ فِي ذَلِكَ. وَلَوْ أَنَّ الثَّمَرَةَ جُذَّتْ ثُمَّ أَطْلَعَتْ الْأُخْرَى وَجُذَّتْ، ضُمَّتْ إحْدَاهُمَا إلَى الْأُخْرَى(المغنى3/53)
وَيُضَمُّ زَرْعُ الْعَامِ الْوَاحِدِ بَعْضُهُ إلَى بَعْضٍ فِي تَكْمِيلِ النِّصَابِ، سَوَاءٌ اتَّفَقَ وَقْتُ زَرْعِهِ وَإِدْرَاكِهِ، أَوْ اخْتَلَفَ. وَلَوْ كَانَ مِنْهُ صَيْفِيٌّ وَرَبِيعِيٌّ، ضُمَّ الصَّيْفِيُّ إلَى الرَّبِيعِيِّ. وَلَوْ حَصَدْت الذُّرَةَ وَالدُّخْنَ، ثُمَّ نَبَتَ أُصُولُهُمَا يُضَمُّ أَحَدُهُمَا إلَى الْآخَرِ فِي تَكْمِيلِ النِّصَابِ؛ لِأَنَّ الْجَمِيعَ زَرْعُ عَامٍ وَاحِدٍ، فَضُمَّ بَعْضُهُ إلَى بَعْضٍ، كَمَا لَوْ تَقَارَبَ زَرْعُهُ وَإِدْرَاكُهُ.(الشرح الكبير على متن المقنع كلاهماعلى مذهب امام الائمة ابى عبدالله احمد بن حنبل الشيباني6/517)
 ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ شیخ الحدیث مبارکپوری

جلد نمبر 2۔کتاب الزکاۃ

صفحہ نمبر 53

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ