سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(567)خود ساختہ ترتیب پر ہمیشگی کرنا

  • 17167
  • تاریخ اشاعت : 2016-07-27
  • مشاہدات : 178

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہمارے ہاں فجر کے وقت نماز سے پہلے قرآن مجید کی تلاوت کی جاتی ہے، پھر بعض پڑھی جاتی ہیں  پھر اذان کہی جاتی ہے ۔ کیایہ سنت ہے یا نہیں ؟ اور اس کا کیا حکم ہے؟‘‘


السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہمارے ہاں فجر کے وقت نماز سے پہلے قرآن مجید کی تلاوت کی جاتی ہے، پھر بعض پڑھی جاتی ہیں  پھر اذان کہی جاتی ہے ۔ کیایہ سنت ہے یا نہیں ؟ اور اس کا کیا حکم ہے؟‘‘


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

مذکورہ بالاعمل یعنی اذان فجر سے پہلے تلاوت قرآن مجید اور بعض دعائوں کو ہمیشہ پابندی سے پڑھنا سنت نہیں بلکہ بدعت ہے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ دارالسلام

ج 1

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ