سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(376)کیا رسول اللہ ﷺ نے رب کو دیکھا ؟

  • 16976
  • تاریخ اشاعت : 2016-07-13
  • مشاہدات : 350

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

سفر معراج میں رسول اللہﷺ پہلے بیت المقدس تشریف لے گئے‘ پھر آسمانوں پر اور سدرة المنتهى تک گئے اور پھر اس سے آگے۔ جس طرح تفسیر صاوی میں مذکور ہے۔ سوال یہ ہی کہ کیا اس موقع پر رسول اللہﷺ نے اپنی آنکھوں سے اللہ تعالیٰ کو دیکھا تھا یا نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

نصوص شرعیہ کی روشنی میں اہل سنت والجماعت کا عقیدہ یہ ہے کہجناب محمدe کو جب معراج ہوئی تو آپﷺ نے اپنے رب کو اپنی آنکھوں سے نہیں دیکھا۔ کیونکہ نبیﷺ سے جب یہ بات دریافت کی گئی تو آپﷺنے فرمایا تھا:

(رَأَیْتَ نُوْراً) میں نے ایک نور دیکھ تھا۔‘‘

دوسری روایت میں ہے: نُوْرٌ اَنّٰی اَرَاہُ ’’ وہ نور ہے‘ میں اسے دیکھ سکتا ہوں؟‘‘ یہ دونوں حدیثیں امام مسلمنے اپنی کتاب ’’صحیح‘‘ میں روایت کی ہیں اور رسول اللہﷺ نے یہ بھی فرمایا ہے:

(وَاعْلَمُوا أَنَّه لَنْ یَرَی مِنْکُمْ أَحَدٌ رَبَّه حَتَّی یَمُوتُ)

’’جان لو! تم میں سے کوئی شخص مرنے سے پہلے اپنے رب کو ہر گز نہیں دیکھا گا۔‘‘

یہ حدیث بھی امام مسلم نے روایت کی ہے۔
ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ دارالسلام

ج 1

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ