سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(175) داڑھی کو خضاب لگانے والے امام کے پیچھے نماز پڑھنا

  • 1631
  • تاریخ اشاعت : 2012-07-25
  • مشاہدات : 1551

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

داڑھی یا سر کے بالوں کو سیاہ خضاب لگانا بڑا گناہ ہے اور ایسے امام جو داڑھی کو سیاہ خضاب لگاتے ہیں ان کے پیچھے نمازپڑھنی جائز ہے یا نہیں اور ایسے خطیب کے پیچھے جمعہ پڑھنا صحیح ہے یا نہیں اور جس خطیب نے بیٹھ کر خطبہ دینا معمول بنا لیا ہو اس کے پیچھے جمعہ پڑھنا جائز ہے یا نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

داڑھی یا سر کے بالوں کو سیاہ خضاب لگانے سے رسول اللہﷺ نے منع فرمایا سیاہ خضاب لگانے والے کے پیچھے کبھی کبھار نماز تو درست ہے البتہ اس کو مستقل امام بنانا درست نہیں۔ دلیل ابوداود کی حدیث میں ہے آپﷺ نے اپنے ایک مسئلہ میں نافرمانی کرنے والے کو امامت سے معزول فرمایا تھا۔’’یہ مسئلہ باب فی کراہیۃ البزاق فی المسجد میں ہے‘‘

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

احکام و مسائل

نماز کا بیان ج1ص 156

محدث فتویٰ

 

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ