سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

سجدہ تلاوت بغیر وضو کے کرنا

  • 160
  • تاریخ اشاعت : 2011-12-05
  • مشاہدات : 666

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

قرآن میں جو سجدے آتے ہیں  کیا وہ بغیر وضو کے کر سکتے ہیں۔ ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اہل علم ميں سے بعض كى رائے ہے كہ يہ نماز ہے، جس كى بنا پر سجدہ كرتے وقت طہارت كى شرط اور قبلہ رخ ہونا اور تكبير كہنا، اور سجدہ سے اٹھ كر تكبير كہنا اور سلام پھيرنا ہوگا۔اور بعض اہل علم اسے عبادت كہتے ہيں، ليكن يہ نماز كى طرح نہيں، اس بنا پر اس ميں نہ تو طہارت كى شرط ہوگى، اور نہ ہى قبلہ رخ ہونا، اور نہ ہى باقى اشياء جيسا كہ ذكر ہو چكا ہے، اور راجح قول بھى يہى ہے۔كيونكہ ہمارے علم ميں طہارت اور قبلہ رخ ہونے كى كوئى دليل نہيں، ليكن سجدہ كرتے وقت اگر طہارت ہو اور قبلہ رخ ہونا ميسر ہو تو يہ افضل ہے، تاكہ علماء كرام كے اختلاف سے نكلا جا سكے۔

اللہ تعالى ہى توفيق بخشنے والا ہے، اللہ تعالى ہمارے نبى محمد صلى اللہ عليہ وسلم اور ان كى آل اور صحابہ كرام پر اپنى رحمتيں نازل فرمائے۔

ديكھيں:فتاوى اللجنة الدائمة للبحوث العلمية والافتاء ( 7 / 62 )۔

 ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

محدث فتوی

 فتوی کمیٹی

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ