سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(130) کیا تکبیر میں ’’ قدْ قَامَتِ الصَّلٰوۃ‘‘ کے جواب میں ’’اَقَامَہَا اﷲُ وَاَدَامَہَا‘‘ کہنا درست ہے.؟

  • 1586
  • تاریخ اشاعت : 2012-07-18
  • مشاہدات : 687

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا تکبیر میں ’’ قدْ قَامَتِ الصَّلٰوۃ‘‘ کے جواب میں ’’اَقَامَہَا اﷲُ وَاَدَامَہَا‘‘ کہنا درست ہے اس کے متعلق جو احادیث پیش کرتے ہیں وہ صحیح ہیں صحیح حدیث کے حوالہ سے تحریر فرمائیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

قَدْ قَامَتِ الصَّلٰوۃ‘‘ کے جواب میں ’’ اَقَامَہَا اﷲُ وَاَدَامَہَا‘‘ کہنے والی روایت صحیح نہیں ضعیف ہے تحفۃ الاحوذی دیکھ لیں البتہ جواب والی عمومی احادیث سے پتہ چلتا ہے کہ ’’ قَدْ قَامَتِ الصَّلٰوۃ‘‘ کے جواب میں بھی ’’قَدْ قَامَتِ الصَّلٰوۃ‘‘ ہی کہنا چاہیے کہ

’’مِثْلُ مَا یَقُوْلُ‘‘ کا تقاضا یہی ہے اور حیعلتین کے جواب میں لا حول الخ کہنے کی استثنائی صورت کی طرح اس مقام پر کوئی استثنائی صورت والی روایت ثابت نہیں۔

    ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

احکام و مسائل

نماز کا بیان ج1ص 121

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ