سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(292) چاندی کی انگوٹھی پہننا

  • 15537
  • تاریخ اشاعت : 2016-04-17
  • مشاہدات : 155

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
ایک قاری نےیہ سوال پوچھاہےکہ چاندی کی انگوٹھی پہننےکےبارےمیں کیاحکم ہےاوراگریہ جائزہےتودائیں ہاتھ میں پہنی جائےیابائیں میں؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
ایک قاری نےیہ سوال پوچھاہےکہ چاندی کی انگوٹھی پہننےکےبارےمیں کیاحکم ہےاوراگریہ جائزہےتودائیں ہاتھ میں پہنی جائےیابائیں میں؟

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!
چاندی کی انگوٹھی پہننےمیں کوئی حرج نہیں،دائیں ہاتھ میں بھی پہنی جاسکتی ہےاوربائیں میں بھی،لیکن دائیں ہاتھ میں پہنناافضل ہےکیونکہ دایاں ہاتھ اشرف ہے۔نبی کریمﷺنےکبھی دائیں ہاتھ میں پہنی اورکبھی بائیں میں اورنبی علیہ السلام کی ذات گرامی ہی اسوہ ونمونہ ہے۔سونےکی انگوٹھی اورسونےکی گھڑی مردوں کےلئےاستعمال کرناجائزنہیں کیونکہ سونےکااستعمال صرف عورتوں کےلئےجائزہے،مردوں کےلئےجائزنہیں ہےکیونکہ رسول اللہﷺکی بہت سی صحیح احادیث اس امرپردلالت کرتی ہیں،کہ سونااورریشم پہننامردوں کےلئےحرام اورعورتوں کےلئےحلال ہے۔
ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

مقالات و فتاویٰ

ص412

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ