سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(81) قبر پر نماز پڑھنا

  • 1537
  • تاریخ اشاعت : 2012-07-17
  • مشاہدات : 745

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
وہ مائی جو مسجد نبویﷺ کی صفائی کرتی تھی وہ فوت ہو گئی تو صحابہ نے رات ورات جنازہ پڑھا کر دفن کر دیا تو پھر نبی کریمﷺ نے پوچھا تو آپﷺ نے کہا کہ مجھے اس کی قبر دکھاؤ تو نبی کریم ﷺ نے قبر پر نماز پڑھی کیا قبر پر نماز پڑھی جا سکتی ہے؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

وہ مائی جو مسجد نبویﷺ کی صفائی کرتی تھی وہ فوت ہو گئی تو صحابہ نے رات ورات جنازہ پڑھا کر دفن کر دیا تو پھر نبی کریمﷺ نے پوچھا تو آپﷺ نے کہا کہ مجھے اس کی قبر دکھاؤ تو نبی کریم ﷺ نے قبر پر نماز پڑھی کیا قبر پر نماز پڑھی جا سکتی ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

مسجد کی صفائی کرنے والی مائی رضی اللہ عنہا کی قبر پر نبی کریمﷺ نے جو نماز پڑھی تھی وہ اس مائی کی نماز جنازہ تھی۔(بخاری۔الجنائز۔باب الصلاۃ علی القبربعدمایدفن۔مسلم۔الجنائز۔باب الصلاۃ علی القبر) اور نماز جنازہ قبر پر پڑھی جا سکتی ہے البتہ نماز جنازہ کے علاوہ دوسری نماز قبر پر پڑھنا منع ہے ۔

وباللہ التوفیق

احکام و مسائل

مساجد کا بیان ج1ص 100

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ