سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(08) عطائی صفت بھی شرک ہے کہ نہیں

  • 1464
  • تاریخ اشاعت : 2012-07-11
  • مشاہدات : 755

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
اگر کوئی آدمی یہ کہے کہ اللہ اپنی صفت کسی کو دے دے تو یہ شرک نہ ہو گا کیونکہ وہ دی ہوئی صفت عطائی صفت ہو گی جبکہ اللہ ذاتی صفات کا مالک ہے مثلاً اللہ ذاتی لحاظ سے غیب جانتا ہے نبیﷺ عطائی طور پر غیب جانتے ہیں قرآن وحدیث سے یہ ثابت کریں کہ کیا عطائی صفت بھی شرک ہے کہ نہیں؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اگر کوئی آدمی یہ کہے کہ اللہ اپنی صفت کسی کو دے دے تو یہ شرک نہ ہو گا کیونکہ وہ دی ہوئی صفت عطائی صفت ہو گی جبکہ اللہ ذاتی صفات کا مالک ہے مثلاً اللہ ذاتی لحاظ سے غیب جانتا ہے نبیﷺ عطائی طور پر غیب جانتے ہیں قرآن وحدیث سے یہ ثابت کریں کہ کیا عطائی صفت بھی شرک ہے کہ نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

کسی آدمی کے قول ’’اللہ اپنی صفت کسی کو دے دے تو شرک نہ ہوگا‘‘ کی بنیاد ’’اللہ تبارک وتعالیٰ کے اپنی صفت کسی کو دے دینے‘‘ پر ہے تو آپ ان بزرگوں سے دریافت فرمائیں آیا واقعی اللہ تبارک وتعالیٰ نے اپنی کوئی صفت مثلاً غیب دانی کسی کو دی بھی ہے ؟ قرآن مجید اور رسول اللہﷺ کی صحیح حدیث سے دلیل پیش فرمائیں اس کا شرک ہونا یا نہ ہونا بعد کا مسئلہ ہے ۔

وباللہ التوفیق

احکام و مسائل

عقائد کا بیان ج1ص 62

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ