سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

نماز ظہر سے پہلے دو سنتیں

  • 13410
  • تاریخ اشاعت : 2024-04-15
  • مشاہدات : 591

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا نماز  ظہر  سے پہلے  دو سنت  پڑھنا صحیح حدیث  سے ثابت ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

ثابت  ہے  عبداللہ  بن عمر رضی اللہ عنہ  فرماتے ہیں  کہ "صليت  مع النبي صلي الله علیه وسلم  سجدتين  قبل الظهر " میں نے  نبی کریم ﷺ کے ساتھ  ظہر  سے پہلے  دو رکعت  پڑھی  ہیں ،(صحیح البخاری :صحیح مسلم :729، وترقیم  دارلسلام :1698، ومترجم  مع تحریفات امین اوکاڑوی  ج 1ص 555)

 اس روایت  میں سجدتین کا لفظ  ہے جس  کا ترجمہ  رکعتین  ہے اسی طرح  سیدنا علی رضی اللہ عنہ  کی روایت  ( سنن الترمذی  :3423 وقال :"حسن صحیح ') میں " فاذا قام  من سجدتين رفع يديه " سے مراد "من الركعتين " ہے"

 نیز دیکھئے جزء رفع الیدین  لبخاری  بتحقیقی  (ح 1ص32)

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ علمیہ (توضیح الاحکام)

ج1ص419

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ