سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(293) تعویز کی اصل حقیقت

  • 13014
  • تاریخ اشاعت : 2014-08-30
  • مشاہدات : 732

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
تعویز  کے با رے میں ایک گرو پ  کا خیا ل  ہے کہ اس کے پہننے  کے با رے  میں سخت  و عید آئی  ہے  جب کہ  دوسرے  گرو پ  کا خیا ل  ہے کہ علا ج  کے لیے  تعویز  پہننا  درست  ہے بشر طیکہ  شر کیہ  نہ ہو ؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

تعویز  کے با رے میں ایک گرو پ  کا خیا ل  ہے کہ اس کے پہننے  کے با رے  میں سخت  و عید آئی  ہے  جب کہ  دوسرے  گرو پ  کا خیا ل  ہے کہ علا ج  کے لیے  تعویز  پہننا  درست  ہے بشر طیکہ  شر کیہ  نہ ہو ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

تعو یز  کے جوا ز  کے با رے  میں میرا  ایک تفصیلی  فتوی"الاعتصام  " میں شا ئع  ہو چکا  ہے جس  کا ما حصل  یہ ہے کہ کتا ب  و سنت  کے نصؤص  پر مبنی  تعو یز  کے بعض  اہل علم  جوا ز  کے قا ئل  ہیں لیکن  احتیا ط  کا تقاضا  یہ ہے کہ صرف ثا بت  شدہ  دم جھا ڑا  پر اکتفا  کیا جا ئے  جس طرح  کہ متعدد  صحیح احا دیث  میں اس کا جوا ز  مصرح  ہے ۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص584

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ