سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(445) بدعت حسنہ کیا ہوتی ہے؟

  • 12464
  • تاریخ اشاعت : 2014-06-19
  • مشاہدات : 714

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بدعت حسنہ کیا ہوتی ہے؟


السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بدعت حسنہ کیا ہوتی ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بعض حضرات بدعت کی تقسیم کرتےہیں کہ ایک بدعت  حسنہ ، یعنی بعض کام بدعت تو ہوتےہیں ، لیکن اچھے ہوتے ہیں۔ دوسری بدعت سیئہ ، یعنی کام بدعت بھی ہیں اور برےبھی ہیں۔ لیکن شریعت کی نظر میں ہر بدعت بری ہے۔ دراصل بدعت کے دو معنی ہیں:ایک لغوی اور ایک اصطلاحی۔ لغوی لحاظ سے ہر نئی چیز کو بدعت کہا جاتا ہے ، مثلاً:بجلی ، ٹرین ، ہوائی جہاز وغیرہ یہ تمام چیزیں دوراول میں نہ تھیں۔ اس لئے لغوی لحاظ سے انہیں بدعت کہاجاتا ہے۔ لیکن شریعت کی اصطلاح میں ہر نئی چیز کو بدعت نہیں کہا جاتا بلکہ دین میں کوئی نیا طریقہ نکالنا اور اس طریقہ کو ازخود مستحب ،لازم یا مسنون قرار دینا بدعت کہلاتا ہے۔ا س اعتبار سے کوئی بدعت اچھی نہیں ہوتی بلکہ ہر بدعت بری ہی ہے۔ (واللہ اعلم )

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

 

فتاوی اصحاب الحدیث

جلد:2 صفحہ:446

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ