سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(450) منافق اور اس کی سزا

  • 11724
  • تاریخ اشاعت : 2014-05-18
  • مشاہدات : 1470

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جو ہر آبا د سے طا لب حسین پو چھتے ہیں  منا فق  کسے کہتے ہیں  اور اسلام  میں اس کی کیا سزا ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

دینی معاملا ت  میں دور خی  پا لیسی  اختیا ر  کر نے  والے  کو شر عاً منافق  کہا جا تا  ہے شا ر جین  حد یث  نے  منا فقت  کی دو اقسا م  بتا ئی  ہیں ۔

(1)انسان  اصلاً کا فر  ہو لیکن  مفا دا ت  کے تحفظ  کے لیے  ظا ہر ی طو ر پر اسلا م کا لبادہ اوڑھے ہو ئے  ہو ا سے  ایما نی  یا اعتقا دی  منا فق  کہا جا تا ہے  اصل  نفا ق  یہی ہے  زما نہ  وحی  میں اللہ تعا لیٰ  بذریعہ  وحی رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم   کو اس قسم  کے منا فقین  کے با ر ے  میں آگا ہ  کر دیتے  تھے  البتہ  اس دور  میں ان  کی تعیین انتہا ئی  مشکل  ہے ۔

(2)انسا ن مسلما ن  ہو لیکن  اس میں  منا فقین  کی  خصلتیں  پا ئی جا تی ئیں  احا دیث  میں ایسی  چند خصلتوں  کی نشا ندہی  کی گئی ہے  جنہیں  منا فقین  کی علا مت  اور مشا نی  قرار  دیا گیا  ہے  مثلاً بات  بات پر جھوٹ  بو لنا  وعدہ  خلافی  کر نا  لڑا ئی  جھگڑے  کے وقت  فحش  گا لی  دینا  غداری  کا مر تکب  ہو نا اور امانت  میں خیا نت  کر نا وغیرہ  اسے شا ر جین  عملی  اور اخلا قی  نفا ق  قرار  دیتے  ہیں  اگر  کو ئی یہ خصلتیں  دا ئمی  عا دت  کے طو ر پر اپنا ئے ہو ئے  ہے تو  ایسا انسا ن  پختہ  عملی منا فق  ہے اعتقا دی  منا فقین  کے متعلق  ارشا د با ری  تعا لیٰ  ہے کہ  انہیں  جہنم  کے نچلے  گڑ ھے  میں پھینکا  جا ئے گا  اس کے علا وہ دنیا  میں ان  کے لیے  کو ئی سزا  نہیں ہے ۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

 

فتاوی اصحاب الحدیث

جلد:1 صفحہ:456

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ