سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(363) اپنی دی ہوئی زکوٰۃ بطور ہدیہ قبول کرنا

  • 1167
  • تاریخ اشاعت : 2012-06-11
  • مشاہدات : 643

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
جب کوئی شخص اپنی زکوٰۃ کسی مستحق کو دے دے اور پھر وہ اسی کو بطور ہدیہ دے دے تو کیا وہ اسے قبول کر سکتا ہے؟


السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جب کوئی شخص اپنی زکوٰۃ کسی مستحق کو دے دے اور پھر وہ اسی کو بطور ہدیہ دے دے تو کیا وہ اسے قبول کر سکتا ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

جب آدمی کسی مستحق کو زکوٰۃ دے، پھر وہ اسی رقم کو بطور ہدیہ مزکی کو دے دے تو اس میں کوئی حرج نہیں بشرطیکہ دونوں کے درمیان اس سلسلے میں کوئی خفیہ منصوبہ بندی نہ ہو اور زیادہ احتیاط اس بات میں ہے کہ وہ اس کو قبول نہ کرے۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ ارکان اسلام

نمازکے مسائل  

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ