سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(157) حج مبرو کی تعریف

  • 11295
  • تاریخ اشاعت : 2014-04-26
  • مشاہدات : 535

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

گجرات سے بیگم عبدالطیف لکھتی  ہیں کہ  حج  مبر و ر کیا ہو تا ہے ؟ اس کی کیا فضیلت  ہے ؟


السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

گجرات سے بیگم عبدالطیف لکھتی  ہیں کہ  حج  مبر و ر کیا ہو تا ہے ؟ اس کی کیا فضیلت  ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے حج  مبر ور  کو افضل  ترین  اعما ل  سے  شما ر  کیا ہے  چنا نچہ  آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  سے سوال کیا گیا کہ سب سے  افضل عمل کیا ہے ؟ تو آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فر ما یا :" کہ اللہ اور اس کے رسول  پر ایما ن لا نا "پھر سوال ہو ا اس کے بعد کس عمل کا  درجہ ہے  ؟ فر ما یا  "اللہ کی راہ میں جہا د کر نا  " پھر سوال کیا گیا  کہ اس کے بعد  ؟ تو آپ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فر ما یا :" کہ حج  مقبو ل ۔(صحیح بخا ری :الحج 1519)

حضرت  عا ئشہ   رضی ا للہ تعالیٰ عنہا  سے مرو ی ہے  کہ انہو ں  نے کہا  :  یا رسو ل اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  ! ہما رے  خیا ل  کے مطا بق  جہا د فی سبیل اللہ  افضل  تر ین  عمل  ہے رسوال اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم  نے فر ما یا :"کہ تمہا رے  یعنی  عو رتو ں کےلیے  افضل  تر ین  عمل  حج مبر ور  ہے ۔(صحیح بخا ری  :1520)حج کی فضیلت کے متعلق  رسول اللہ  صلی اللہ علیہ وسلم   نے فر ما یا :' کہ جو شخص  حج  کرے  اور دورا ن  حج  شہو ت  انگیز  اور اخلا ق  سے گری ہو ئی با تو ں سے پرہیز کرے  ۔نیز  اللہ کی نا فر ما نی  سے اپنے  آپ  کو محفو ظ رکھے تو گنا ہوں سے  ایسے صا ف  ہو جا تا ہے جیسے  آج  ہی  اپنی  ما ں  کے بطن  سے پیدا ہو ا(صحیح  بخا ر ی : الحج  1521)

ہما ر ے نزدیک حج مبر ور یہی ہے  کہ جس حج میں مذکو رہ با لا  فضیلت  مل جا ئے  یعنی اسے کا مل  آدا ب  شرا ئط کے سا تھ  اس طرح ادا کیا جا ئے  کہ انسا ن کے سا بقہ گنا ہ ڈھل جا ئیں اور آئندہ  ان سے اجتنا ب  کا خیا ل کر ے  ویسے  محد ثین وعلما نے  اس کی  مختلف  تعریفیں  کی ہیں جن کی وضاحت  حسب ذیل  ہے : وہ حج  جس کے دوران  کسی گنا ہ  کا ارتکا ب  نہ کیا جا ئے  حج مبر ور  کہلا تا ہے اس سے مرا د وہ حج ہے  جو عند  اللہ  مقبو ل  ہو جا ئے  اس کی  علا مت  یہ ہو تی ہے کہ  آیندہ  اسے  گنا ہو ں  سے  نفرت ہو جائے وہ حج جس میں ریا کا ری  شہرت فحا شی  لڑا ئی  جھگڑا  نہ کیا گیا ہو ۔ حج مبر ور یہ ہے  کہ آدمی پہلے کی نسبت  بہتر ہو  کر لو ٹےاور گنا ہو ں  کی کوشش نہ  کر ے حسن بصر ی  رحمۃ اللہ علیہ  فر ما تے ہیں  :"کہ حج  مبرور یہ ہے کہ انسا ن  اس کے بعد  دنیا سے بے رغبت  اور آخرت  کا طلب گار  بن جا ئے  در حقیقت حج میں  تمام  امو ر  با لا  شا مل  ہو تے ہیں ۔(امر عاۃالمفا تیح6/190)

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

 

فتاوی اصحاب الحدیث

جلد:1 صفحہ:189

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ