سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(253) اللہ تعالیٰ سے قرآن کے ساتھ دعا کرنا

  • 10611
  • تاریخ اشاعت : 2014-03-18
  • مشاہدات : 376

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
: کیا انسان کے لیے  اس طرح  دعا  کرنا جائز  ہے: اسئلك بكل  اسم   هو لك سميت به نفسك او علمته احداً من خلقك  او انزلته في  كتابك ۔۔۔"اے اللہ ! میں  تیرے  ہر اس نام کے واسطہ سے سوال کرتا ہوں جس کے ساتھ  تو  نے اپنی  ذات گرامی کو موسوم  کیا ہے یا جسے تو نے اپنی کتاب میں ذکر  فرمایا ہے۔۔۔الخ کہ  تو قرآن  کے ساتھ  مجھے تنگی کے بعد کشادگی ' غم  کے بعد خوشی  اور سختی کے بعدآسانی  عطا فرما؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

: کیا انسان کے لیے  اس طرح  دعا  کرنا جائز  ہے: اسئلك بكل  اسم   هو لك سميت به نفسك او علمته احداً من خلقك  او انزلته في  كتابك ۔۔۔"اے اللہ ! میں  تیرے  ہر اس نام کے واسطہ سے سوال کرتا ہوں جس کے ساتھ  تو  نے اپنی  ذات گرامی کو موسوم  کیا ہے یا جسے تو نے اپنی کتاب میں ذکر  فرمایا ہے۔۔۔الخ کہ  تو قرآن  کے ساتھ  مجھے تنگی کے بعد کشادگی ' غم  کے بعد خوشی  اور سختی کے بعدآسانی  عطا فرما؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اس دعا  میں کوئی  حرج نہیں۔یہ دعا  مسند احمد وغیرہ  کی صحیح حدیث میں موجود ہے۔دعا کے آخری الفاظ میں بھی کوئی  حرج  نہیں کیونکہ  قرآن  مجید اللہ تعالیٰ کا کلام ہے اور  اللہ تعالیٰ نے اسے شفاء'ہدایت اور رحمت بنایا ہے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج4ص201

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ