سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

سگر یٹ نو ش امام کی امامت

  • 10514
  • تاریخ اشاعت : 2014-03-10
  • مشاہدات : 397

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا ایسے امام کی اقتدا ء میں نماز جا ئز ہے جو سگر یٹ نو شی کر تا ہے


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سگر یٹ نو شی حرا م ہے کیو نکہ اب یہ با ت یا یہ ثبو ت کو  پہنچ چکی ہے کہ یہ مضر صحت ہے یہ خبیث چیز ہے اس میں اسراف اور فضو ل خر چی ہے اور اللہ تعا لیٰ نے فر ما یا ہے :

﴿وَيُحَرِّ‌مُ عَلَيهِمُ الخَبـٰئِثَ...﴿١٥٧﴾... سورةالاعراف

"اور نا پا ک چیز وں کو ان پر حرا م ٹھہرا تے ہیں ۔"

جہا ں تک سگریٹ نو شی کر نے وا لے امام کی اقتدا ء میں نما ز ادا کر نے کا تعلق ہے تو اگر اس کی اقتدا ء میں نماز تر ک کر نے سے نما ز جمعہ یا نما ز با جما عت فو ت ہو تی ہو یا کو ئی فتنہ رو نما ہو تا ہو  تو اخف الضرر ین (بڑی خرا بی کی  نسبت چھو ٹی خرا بی کو اختیا ر کر نا ) کے اصول پر عمل کر نے کی وجہ سے اس امام کے پیچھے نما ز ادا کر نا وا جب  ہو گا اور اگر  بعض لو گ اس کے پیچھے نما ز  چھو ڑ دیں  اور اس سے تر ک جمعہ یا تر ک جما عت لا ز م نہ آئے کو ئی اور بھی نقصا ن نہ ہو اور امام کے پیچھے نما ز نہ پر ھنے سے اسے تنبیہ بھی ہو اور وہ اس طرح سگریٹ نو شی سے با ز آ جا ئے تو اس صورت میں اس کے پیچھے نما ز چھو ڑ دینا جا ئز ہو گا تا کہ اسے سر زنش ہو اور وہ اس حرا م امر کے ارتکا ب سے با ز آجا ئے اور یہ عمل انکا ر منکر کے قبیل سے ہو گا اور اگر اس امام کے پیچھے نما ز تر ک کر نے سے کو ئی نقصا ن  بھی نہ ہو تر ک جمعہ و جما عت بھی لا ز م نہ آئے اور نہ امام ہی اس سے کو ئی سبق سیکھے تو پھر کو شش کی جا ئے کہ کسی ایسے امام کی اقتدا ء میں نما ز پڑ ھی جا ئے جو اس کی طرح فسق و معصیت میں مبتلا نہ ہو اس سے نماز زیا دہ مکمل بھی ہو گی اور دین کی زیا دہ حفا ظت بھی ۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج1ص501

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ